پاکستانیخبریں

حالات بہتر ہوتے ہی تعلیمی ادارے کھول دیئے جائیں گے۔ وفاقی وزیر تعلیم

وفاقی وزارت تعلیم کی جانب سے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا تھا کہ 25 دسمبر سے 10جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات ہوں گی۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر تعلیمی اداروں کو چھٹیاں دینے کا فیصلہ درست قرار دے دیا ہے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں شفقت محمود نے لکھا کہ بچے گھروں میں رہ کر محفوظ ہیں۔ حالات بہتر ہوتے ہی تعلیمی ادارے کھول دیئے جائیں گے۔

شفقت محمود کا کہنا تھا کہ بچوں کا تعلیم سے گہرا تعلق ہے، کسی صورت قبل از وقت تعلیمی ادارے کھول کر بچوں کی زندگی کو خطرے میں نہیں ڈالا جائے گا۔واضح رہے کہ کورونا وائرس کے جاں لیوا حملوں میں شدت آ چکی ہے۔ نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے آج جاری ہونے والے اعدادوشمار کے مطابق بدھ کے روز 105 افراد اس موذی مرض کے ہاتھوں جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز پرائیویٹ اسکولز ایسوسی ایشن نے 11جنوری سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کیا تھا۔ پرائیویٹ اسکولز ایوسی ایشن کا ہنگامی اجلاس گذشتہ روز ہوا جس میں عہدیداران نے اتفاق کیا ملک بھر میں اسکولز 11جنوری سے کھول دیے جائیں گے ، اس ضمن میں حکومت چاہے کسی بھی قسم کا اعلان کرے یا نہ کرے لیکن پرائیویٹ تعلیمی ادارے 11 جنوری کو ہی کھول دیے جائیں گے تاہم اس سلسلے میں حکمت عملی بعد میں طے کی جائے گی۔
واضح رہے کہ کورونا کی بگڑتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر ملک بھر میں تعلیمی ادارے بند کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔ وفاقی وزارت تعلیم کی جانب سے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا تھا کہ 25 دسمبر سے 10جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات ہوں گی اور تعلیمی اداروں میں بچے نہیں آئیں گے، بچے گھر بیٹھ کر تعلیم جاری رکھیں گے۔11 جنوری کو تمام تعلیمی ادارے دوبار کھول دئیے جائیں گے ، شفقت محمود نے مزید کہا تھا کہ 26 نومبر سے 24 دسمبر تک ہوم لرننگ کا سلسلہ جاری رہے گا ،26 نومبر سے پاکستان کے تمام تعلیمی ادارے سے آن لائن کلاسز لے سکتے ہیں۔ اسکول کالجز، یونیورسٹیز، ٹیوشن سینٹرز سب بند ہوں گے۔

ٹیگز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ مضامین

Back to top button
Close
Close