پاکستانیخبریں

قومی اسمبلی میں ذاتیات پر تقاریر ، اسپیکر کا نوٹس

ہم اپنا مذاق خود اڑواتے ہیں، ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری

قومی اسمبلی میں اس وقت صورتحال گھمبیر ہوگئی جب ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے اسمبلی میں رولنگ دیتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز ایک رکن قومی اسمبلی کی جانب سے ذاتیات پر قابل اعتراض جملے کہے گئے آئندہ ایسا کسی نے کیا تو اسکو اسمبلی سے باہر نکال دیا جائے گا . قاسم سوری کا کہنا تھا کہ ہم اپنا مذاق خود اڑواتے ہیں آئندہ ایسا نہیں ہونا چاہیے

اس سے قبل اسپیکر اسد قیصر نے کہا کہ بعض اراکین ایسے الفاظ ادا کرتے ہیں جو اس منتخب اسمبلی کی توہین ہے گزشتہ روز پاکستان پیپلزپارٹی کے قادر پٹیل نے ایسے الفاظ ادا کیے جو پارلیمنٹ کے تقدس کے منافی تھے انکا کہنا تھا کہ قاعدہ 20، 21 کے تحت ایسے رکن کو باہر نکالا جاسکتا ہے اور اسکی سیشن کے دوران رکنیت معطل کی جاسکتی ہے.

اس حوالے سے پاکستان پیپلزپارٹی کے رکن سید نوید قمر نے نشاندہی کی گزشتہ روز ایسے کلمات حکومتی نشستوں سے بھی ادا ہوئے آپ نے صرف ایک رکن کا نام لیا یہ زیادتی ہے آپکو دونوں سائیڈ دیکھنی چاہیے تھی

مسلم لیگ ن کے خواجہ آصف نے اس بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ ذاتیات پر تقاریر دونوں طرف سے ہوئیں صرف ایک کا نام لینا مناسب نہیں ہے کسی کی ذات کو نشانہ بنانا غیر مناسب ہے ۔

تبصرے

ٹیگز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close