پاکستانیخبریں

قومی اسمبلی میں اہم مسائل کی بجائے ایک دوسرے پر ذاتی حملے

تینوں بڑی جماعتیں ایک دوسرے پر ذاتی حملے کررہی ہیں

پاکستان کی قومی اسمبلی گزشتہ کئی روز سے مباحثے کے فورم کے بجائے تمسخر اور تضحیک کا مرکز بنی ہوئی ہے
پاکستان پیپلزپارٹی کے قادر پٹیل کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے حوالے سے انتہائی قابل اعتراض گفتگو کی گئی اور پھر جواب میں تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عطاء اللہ صاحب نے بلاول بھٹو زرداری کے حوالے سے انتہائی نازیبا گفتگو کی اس کے بعد میں اسپیکر قومی اسمبلیاسد قیصر نے قومی اسمبلی میں ذاتیات پر گفتگو کرنے پر پابندی لگا دی اور سخت وارننگ جاری کی یہ اگر ایسا دوبارہ کیا گیا تو اس رکن کو قومی اسمبلی سے نکال دیا جائے گا. اس سب کے باوجود گزشتہ روز ہونے والی تقاریر میں بھی اراکین نے ذاتیات پر زیادہ گفتگو کی،
خواجہ آصف نے وزیراعظم عمران خان پر خاتم النبین کی لفظ کی ادائیگی پر ذاتی حملہ کیا اور ساتھ ہی پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی وزیر زرتاج گل کا بھی تمسخر اڑایا ۔ بلاول بھٹو زرداری کی تقریر کا موضوع بھی بجٹ کم عمران خان کی ذات زیادہ تھی.
قومی اسمبلی کا فورم قوانین بنانے اور اہم مسائل پر مباحثے کا فورم ہے جبکہ اس سیشن میں بجٹ پر بحث ہورہی ہے ان مباحثوں کے دوران اراکین اسمبلی کی بجٹ پر توجہ کم جبکہ ذاتی حملوں پر توجہ زیادہ ہے۔

تبصرے

ٹیگز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close