پاکستانیخبریں

ایک اور جاندار آواز خاموش ہوگئی

سابق امیر جماعت اسلامی سید منور حسن انتقال کرگئے

جماعت اسلامی کے سابق امیر سید منور حسن رضائے الٰہی سے انتقال کرگئے .

سید منور حسن طویل عرصے سے علیل اور مقامی اسپتال میں زیر علاج تھے

سید منور حسن اگست 1941 کو دہلی میں پیدا ہوئے۔ ان کا خاندان پہلے دہلی سے لاہور اور پھر کراچی آیا۔ انہوں نے کراچی میں تعلیمی سفر دو ماسٹرز تک مکمل کیا۔ نیشنل سٹوڈنٹس کے پلیٹ فارم سے طلبہ سیاست کا آغاز کیا ۔ 1960 میں سید مودودی کے لٹریچر سے متاثر ہو کر اسلامی جمعیت طلبہ میں شامل ہوئے اور ایک کارکن سے لیکر پاکستان کے ناظم اعلی کی ذمہ داری تک فائض رہے ۔ اسکے بعد جماعت اسلامی میں شامل ہوئے اور کراچی جماعت کے امیر ، مرکزی جماعت کے جنرل سیکریٹری رہے۔سید منور حسن کی ذات جاہ و حشمت اور حفظ مراتب سے مبرا رہی ۔ جماعت اسلامی کے چوتھے امیر منتخب ہوئے اور29 مارچ 2009 سے 29 مارچ 2014 تک ذمہ داری پر رہے۔ سوگواران میں اب ایک بیوہ، ایک بیٹا اور ایک بیٹی شامل ہیں، شادمان ٹاون کراچی میں ہمیشہ ایک چھوٹے سے گھر میں مقیم رہے۔ان کی شخصیت خوف خدا، للہیت، حق گوئی اور اقامت دین کی جدو جہد سے عبارت رہی۔۔

تبصرے

ٹیگز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close